روزی که می‌سِرِشت فلک آب و خاکِ من – عبدالرحمٰن جامی (فارسی + اردو ترجمہ)

روزی که می‌سِرِشت فلک آب و خاکِ من
می‌سوخت زآتشِ تو دلِ دردناکِ من
سررشتهٔ وصالِ تو گر آمدی به کف
پیوند یافتی جگرِ چاک چاکِ من
هرچند دل ز یاریِ خود پاک بینمت
دانم سرایتی بِکُند عشقِ پاکِ من
روزی که می‌نوشت قضا نامهٔ اجل
شد نامزد به تیغِ جفایت هلاکِ من
جامی مجوی خوش‌دلی از من که در ازل
آمیختند با غم و درد آب و خاکِ من
(عبدالرحمٰن جامی)

ترجمہ:
اُس روز کہ جب فلک میری آب و خاک خمیر کر رہا تھا، میرا دلِ دردناک تمہاری آتشِ [عشق] سے جل رہا تھا۔ (یعنی میں قبل از تولّد سے تمہارا عاشق ہوں۔)
اگر تمہارے وصال کا سررشتہ [میرے] دست میں آ جاتا تو میرا جگرِ چاک چاک پیوند پا لیتا۔ ×
ہرچند میں تمہارا دل اپنی یاری سے پاک دیکھتا ہوں، [لیکن] میں جانتا ہوں کہ میرا پاک عشق سرایت و تأثیر کر جائے گا۔
جس روز کہ قضا نامۂ اجل لکھ رہی تھی، تمہاری تیغِ جفا سے میری ہلاکت معیّن ہو گئی۔
اے جامی! مجھ سے خوش دلی مت تلاش کرو کہ ازل میں میری آب و خاک کو غم و درد کے ساتھ مخلوط کیا گیا تھا۔

× سَرْرِشتہ = دھاگے کا سِرا

Advertisements


جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s