"تُرکی بولنا ہمیں زیب نہیں دیتا”

قفقازی آذربائجانی طنزیہ شاعر میرزا علی اکبر صابر (وفات: ۱۹۱۱ء) ایک نظم میں خود کے زمانے کے ‘دانِشوروں’ کو طنز کا نشانہ بناتے ہوئے کہتے ہیں:

"اینتئلیگئنتیک، بو که، بؤهتان دئییل،
تۆرکی دانېشماق بیزه شایان دئییل،
تۆرک دیلی قابیلِ عیرفان دئییل،
بیز بونا قائیل اۏلان اینسان‌لارېق!
آی باراکاللاه، نه گؤزل جان‌لارېق!..

تۆرک قزئتی وئرسه ده عقله ضییا،
من اۏنو آلمام الیمه مۆطلقا،
چۆنکی مۆسلمانجا قۏنوشماق بانا
عئیب‌دیر! اؤز عئیبیمیزی آنلارېق!
آی باراکاللاه، نه گؤزل جان‌لارېق!”
(میرزا علی‌اکبر صابر)

ہم دانِشور ہیں، [اور] یہ [کوئی] بُہتان نہیں ہے۔۔۔ تُرکی بولنا ہمیں زیب نہیں دیتا۔۔۔ تُرکی زبان قابلِ علم و معرفت نہیں ہے۔۔۔ ہم اِس چیز کے قائل انسان ہیں!۔۔۔ اے، بارک اللہ! ہم کس قدر خوب افراد ہیں!۔۔۔
تُرک (تُرکی) اخبار خواہ عقل کو روشنی دیتا ہو، [تو بھی] میں اُس کو ہرگز اپنے دست میں نہ لوں۔۔۔ کیونکہ مسلمانوں کی طرح گفتگو کرنا میرے لیے عیب ہے!۔۔۔ ہم اپنے عیب کو سمجھتے ہیں!۔۔۔ اے، بارک اللہ! ہم کس قدر خوب افراد ہیں!۔۔۔

"İnteligentik, bu ki, böhtan deyil,
Türki danışmaq bizə şayan deyil,
Türk dili qabili-irfan deyil,
Biz buna qail olan insanlarıq!
Ay barakallah, nə gözəl canlarıq!..

Türk qəzeti versə də əqlə ziya,
Mən onu almam əlimə mütləqa,
Çünki müsəlmanca qonuşmaq bana
Eybdir! Öz eybimizi anlarıq!
Ay barakallah, nə gözal canlarıq!”

Advertisements


جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

w

Connecting to %s